وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری کے کوئٹہ پریس کلب میں داخلے پر پابندی عائد

کوئٹہ پریس کلب اور بلوچستان یونین آف جرنلسٹس کی جانب سے وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری کے صحافیوں سے ناراو رویئے ، صحافیوں کی جبری برطرفیوں ، تنخواہوں کی بندش اور تنخواہوں سے کٹوتیوں کا سلسلے میں کوئٹہ پریس کلب میں داخلے پر پابندی لگا دی،

صحافیوں نے شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری کے کوئٹہ پریس کلب میں داخلے پر پابندی عائد اور ان کے خلاف احتجاج کا اعلان کیا گیا ہے ، کوئٹہ پریس کلب اور بلوچستان یونین آف جرنلسٹس کے جاری کردہ مشترکہ بیان میں کہا گیا ہے کہ ملک بھر میں مختلف میڈیا ہاوسز کی جانب سے صحافیوں کے خلاف مسلسل کاروائیوں کا سلسلہ جاری ہے ، ایک جانب صحافیوں کا معاشی قتل کا سلسلہ جاری ہے تو دوسری جانب ملازمتوں کا کوئی تحفظ نہ ہونے کی وجہ سے صحافیوں میں شدید بے چینی پائی جاتی ہے ، جس پر پورئے ملک میں صحافی اور صحافتی تنظیمیں سراپا احتجاج ہیں لیکن وفاقی حکومت نے اس پر مکمل خاموشی اختیار کررکھی ہے ، جبکہ ایسے میں وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری کا صحافیوں سے رویہ اور ان کے اقدامات افسوسناک ہیں ، وفاقی وزیر اطلاعات کی جانب سے صحافی تنظیموں کے قائدین کو ملاقات کا وقت دینے کے بعد ملاقات کے لئے نہ آنے کی شدید الفاظ مین مذمت کرتے ہوئے کہا گیا ہے وفاقی وزیر کے اس اقدام سے پورئے ملک کے صحافیوں میں سخت غم و غصہ پایا جاتا ہے ، وفاقی وزیر اطلاعات میڈیا میں جاری اس بحران پر قابو پانے اور صحافیوں کی جبری برطرفیوں ، تنخواہوں کی بندش اور تنخواہوں سے کٹوتیوں کا سلسلہ بند کرانے کے لئے اپنا کردار ادا کرنے کی بجائے جانبدارانہ کرادا ادا کررہے ہیں ،